ہانگ گانگ(11فروری2015)پاکستان نے سال2014میں سرمائے کی منڈی میں قرضوں اور حصص کے دونوں شعبوں کے حوالے سے مالیات میں غیر معمولی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر عالمی مالیاتی رسالےIFRکی طرف سے سرمایہ کاری کے ضامن اور حصص فروخت کنندہ کا سالانہ ایوارڈ”Issuer of the year”حاصل کیا ہے۔
ذرائع ابلاغ اور اطلاعات کی ایک بڑی کثیر القومی فرم تھامسن رائٹرز کے تحت شائع ہونے والے معروف مالیاتی رسالے/انٹرنیشنل فناسنگ ریویو”IFR”کے تحت ہانگ کانگ کے ایک مقامی ہوٹل میں گذشتہ روز آئی ایف آر ایشیاء ایوارڈ کی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ یہ معروف ایوارڈ دینے کی تقریب میں مالیات اور بینکاری کے شعبوں سے تعلق رکھنے والی اعلیٰ انتظامی حکام اور پالیسی سازوں نے شرکت کی۔
پاکستان کے لیے یہ اعلیٰ ایوارڈ ہانگ کانگ میں پاکستان کے قونصل جنرل غفران میمن نے حاصل کیا۔
آئی ایف آر ایوارڈ عالمی مالیاتی صنعت میں شراکتی اور انفرادی کامیابیوں کے اعتراف میں دیا جاتا ہے۔ آئی ایف آر ایک ہفتہ وار رسالہ ہے جس میں سرمایہ کاری اور بینکاری کے شعبوں میں ہونے والی پیش رفت کا جائزہ شامل ہوتا ہے اور عالمی بونڈز، اضافی گنجائش اور قوت کی حامل مالیت کاری، شراکتی قرضوں، بازار حصص اور سرمائے کی منڈیوں، تغّیرپزیر مالیاتی معاملات، ابھرتی ہوئی منڈیوں اور متغّیرہ پیمانوں کا تفصیل کے ساتھ جائزہ لیا جاتا ہے۔
پاکستان کو یہ ایوارڈدینے کے متعلق منتظمین کا کہنا تھا کہ سرمایہ کاری کے لیے ضمانتیں فراہم کرنے والے بہت سے ایشیائی اداروں اور حکومتوں نے2014میں بڑی آسانی کے ساتھ اپنے فنڈز میں اضافہ کیا ہے لیکن پاکستان نے قرضوں اور حصص کی سرمائے کی منڈیوں میں انتہائی قابل قدر پیش رفت کی ہے۔ تقریب کے منتظم نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان کو خود کو عالمی منڈیوں کے نقشے میں ٹھوں بنیاد پر کھڑا رکھنے پر آئی ایف آر کا یہ سالانہ ایوارڈ دیا جا رہا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے2014میں سرمائے میں اضافے کے لیے غیر معمولی منصوبوں کا آغاز کیا اور تمام بین الاقوامی منڈیوں میں سرمایہ کاروں کے لیے بھر پور ترقی کے ساتھ تبدیلی کی ایک حوصلہ افزاء مثال پیش کی ہے۔ اس صورتحال کا نتیجہ یہ نکلا ہے کہ پاکستان کی نئی حکومت وہ دو کام کرنے کے قابل ہوتی ہے جس کو180ملین آبادی والا یہ ملک پچھلے سات برسوں میں کرنے کے قابل نہیں ہو سکا تھا ان میں سے ایک امریکی ڈالر بانڈ کی قیمت مقرر کرنا اور دوسرے سرمائے کی منڈیوں میں حصص فروخت کرنا ہے۔
ایوارڈز حاصل کرنے والوں میں ایشیاء کے مختلف حصوں سے تعلق رکھنے والے ادارے سٹی گروپ، اے این زیڈ، ایچ ایس بی سی، ہوچی سن وامپووا، سٹنڈرز چارٹرڈ، گولڈمین ساش، علی بابا گروپ اور کریڈٹ سوس شامل ہیں۔ پاکستان واحد آزاد ملک ہے جس نے اشیاء کے لیے آئی ایف آر کا یہ معتبر ایوارڈ حاصل کیا۔

Leave Comment